تحفے میں ملی چینی بسیں ایک سال سے گوادر پورٹ پر پابند

چینی حکومت کی طرف سے ملنے والی بسوں کا ماڈل

گزشتہ سال اگست کے مہینے میں چائنہ اوورسیز پورٹ ہولڈنگ کمپنی(COPHC) نے تین بسیں بلوچستان حکومت کے حوالے کیں تاکہ یہ بسیں گوادر کے طلبا ء وطالبات کو ان کے سکول، کالج تک پہنچانے میں استعمال ہو سکیں۔ COPHC کمپنی چینی حکومتی کمپنی ہے۔ یہ تین بسیں اس کمپنی کی طرف سے تحفہ تھیں اور گوادر پورٹ میں ایک تقریب کے موقع پر ان کی چابیاں بلوچستان ایجوکیشن ڈپارٹمنٹ کے حوالے کی گئیں۔ تقریب کے موقع پر چائینا کے کونسل جنرل مسڑ مئی پاؤ، کراچی کے پی آر او رخسانہ رحیم، بلوچستان ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے سیکریٹری مسڑغلام علی بلوچ ، ضلع گوادر ایجوکیشن آفیسر محمد ... مزید پڑھئے »

گوادر میں بس ٹرانسپورٹ ایک ہفتے کی بندش کے بعد بحال

گوادر شہر میں ٹرانسپورٹ کا ایک منظر

گوادر شہر ایک ہفتے کی بندش کے بعد بس ٹرانسپورٹ بحال ہو گئی جس سے عوام میں خوشی کی ایک لہر دوڑ گئی ہے۔ گزشتہ ایک ہفتے کے دوران گوادر شہر سمیت بلوچستان بھر میں ٹرانسپورٹ یونین کی جانب سے بڑتال کی وجہ سے ٹرانسپورٹ کا نظام بندش کا شکار تھا۔ ٹرانسپورٹ یونین نے ہڑتال کا اعلان تب کیا جب پچھلے ہفتے دو بسوں کو غیر قانونی ڈیزل سپلائی کرنے پر سیکیورٹی اداروں نے سیل کر دیا۔ سیکیورٹی اداروں کا موقف تھا کہ یہ سپلائی غیر قانونی ہے اور اس عمل کی روک تھام کے لئے ایسا کیا گیا ہے۔ دوسرے ... مزید پڑھئے »

گوادر تاریخ: ٹیلی گراف اور تعلیم کے میدان میں برطانیہ کا کردار

ٹیلی گرام جزیرہ جس کو برطانیہ نے ٹیلی گراف کے ذریعے گوادر سے ملایا

1862 میں برطانیہ اور فرانس کے درمیان ایک معاہدہ ہوا جس میں برطانیہ عمان کی آزادی کو برقرا رکھنے کا ذمّہ دارٹھہرایا گیا۔ اس دوران برطانیہ کی خواہش تھی کہ ایران، عمان مسقط اورافریقہ کے جو علاقے عمان کے زیر تھے ان کے درمیان تیز تر رابطہ کا ذریعہ ہو۔ ان علاقوں میں زنجبار، تنزانیہ اور ہندوستان کے کچھ علاقے بھی شامل تھے۔ اس مقصد کے لئے برطانیہ نے لندن، افریقہ کے چند ممالک، عمان مسقط، گوادراور ایرانی بلوچستان کے سرحدی علاقے، بلوچستان میں کیچ، سندھ کراچی اور بمبئی، کلکتہ کے درمیان ٹیلی گراف کا تار بچھانے کا کام شروع ... مزید پڑھئے »

گوادر ایجوکیشن ویلفئیر سوسائٹی افطار پارٹی میں گوادر کے مسائل پر گفتگو

گوادر ویلفئیر ایجوکیشن سوسائٹی کی افطار پارٹی کے مققرین اور شرکاء

یکم جولائی کو گوادر ایجوکیشن ویلفئیر سوسائٹی (جیوز) کے دفتر میں ایک افطار پارٹی کا انعقاد ہوا۔ جیوز ہمیشہ ہر ماہ کی پہلی تاریخ کو اپنے دفتر میں ایسے پروگرامات کا انعقاد کرتی ہے جن کا مقصد گوادر کے عوام کے درمیان رواداری، بھائی چارہ اور میل ملاپ قائم کرنا ہے۔ اس بار بھی جیوز کے آرگنائزر کے بی فراقؔ صاحب نے اس ماہ صیام کے با برکت موقع پر افطاری کا پروگرام ترتیب دیا۔ اس پروگرام میں مہمان خصوصی بی این پی کے ضلعی آرگنائزر ڈاکڑ عزیز تھے اور دیگر مہمانوں میں جماعت اسلامی تحصل گوادر کے امیر سعید احمد بلوچ، اسٹینڈینگ کمیٹی ... مزید پڑھئے »

گوادر کے تاریخی غار

غار میں داخل ہونے اور نکلنے کے مختلف راستے

صوبہ بلوچستان کی سب سے اہم جغرافیائی خصوصیات اس میں موجود پہاڑ اور اس سے ملحقہ سمندر ہے۔ مکران ڈویژن میں بھی پہاڑی سلسلے ہیں جن میں صدیوں سے وقتا فوقتا کسی نہ کسی طور پر آبادی بھی موجود رہی ہے۔ مکران ڈویژن کے اہم شہر گوادر کو کل کا دبئی بنانے کی باتیں ہو رہی ہیں۔ ایسے میں اہم ہے کہ ہم اس شہر، اور اس خطے کی تاریخی پہلوؤں پر بھی ایک نظر دوڑا لیں۔ گوادر شہر شے ملحقہ کوہِ باتیل کی پہاڑی ہے۔ اس پہاڑی پر صدیوں سے غاروں کے پورے پورے سلسلے موجود ہیں جن میں ماضی ... مزید پڑھئے »